سخن سراپا

غزل

اسریٰ رضوی

بچھڑےہوئے لوگوں کو پکارا نھیں جاتاہر قصہ سرِ بزم اچھالا نہیں جاتا تم بات نکالو تو سنیں ہم بھی...

غزل

نمرہ شکیل

کیا تشفی بوند سے ہو گی سمندر دیکھ کر کشمکش میں پڑ گئے ہم چشم و ساغر دیکھ کر بت پرستی عین کعبے میں...

نظم

نظم

اسری رضوی

تخم الفت قلب انساں میں کوئی بونے کو ہے معجزہ شاید کوئی پھر رونما ہونے کو ہے شام کے کاندھے پہ دن...

نظم

نظم

مبشر احمد عازم

ذاتِ مومن مومنوں کی یار ہے اور ’’ اَشِدّاءُعَلَی الْکُفّار‘‘ ہے دل کی نرمی، شیریں گفتاری و حِلم...

آواز اذاں

آواز اذاں

صفیہ بنت مکرم

ہم کو دھیرے سے جگا دیتی ہے آواز اذاں رب سے ملنے کو سدا دیتی ہے آواز اذاں لوگ کہتے ہیں کہ بے وقت...

ترانہ

شیما نظیر

تم نہ اٹھوگے تو اب کون یہاں اٹھے گا انقلاب آئیگا تو تم سے ہی بس آئے گا حق کی آواز زمانے میں...

نظم

نمرہ شکیل

چراغوں کی ہوا بھی چارہ گر ہے یہی تو امتزاج خیر و شر ہے ہم اپنے وقت سے پیچھے رہے ہیں ہمیں درپیش...

قوام

قوام

درشہوار

نظممحترم مرد و خواتین اب تو ہوں بیدارِ نوم آپ دونوں کی بدولت ہی تو ہے معراجِ قوم نیک مومن مرد...