ایمن عبدالستار

پناہ گاہ[قسط:  7 ]

پناہ گاہ[قسط: 7 ]

اب نہ اسے اچھے کپڑوں کا شوق رہا تھا نہ سجنے سنورنے کا۔ آفس بھی عبایا پہن کر جانے لگی تھی۔ دن...

پناہ گاہ (قسط:05)

پناہ گاہ (قسط:05)

وہ چڑ کر کہتی۔ ’’سمیرا مجھ سے جتنا حق ادا ہو سکتا ہے اتنا تو میں پورے دل و جان سے کوشش کرتا...

پناہ گاہ (قسط:۳)

پناہ گاہ (قسط:۳)

سمیرا تو اس کے خواب دیکھنے لگی تھی۔ خوبصورت خواب اس آنکھوں کی دہلیز پر خوش رنگ پروں والے پرندوں کی...