لوٹ آئے عشق زلیخا کی نشانی بن کر حسن بے پردہ ہوا دشمن جانی بن کر شب کی خاموشی فضائے جو امیدیں...